سوال جلد ی ارسال کریں
اپ ڈیٹ کریں: 2019/9/19 زندگی نامہ کتابیں مقالات تصویریں دروس تقریر سوالات خبریں ہم سے رابطہ
زبان کا انتخاب
همارے ساتھ رهیں...
فهرست کتاب‌‌ لیست کتاب‌ها

مواعظ ونصائح

مواعظ ونصائح

قال اللہ تعالیٰ فی کتابہ الکریم:" إِنَّ اللَّهَ يَأْمُرُ بِالْعَدْلِ وَ الْإِحْسانِ وَ إِيتاءِ ذِي الْقُرْبى‌ وَ يَنْهى‌ عَنِ الْفَحْشاءِ وَ الْمُنْكَرِ وَ الْبَغْيِ يَعِظُكُمْ لَعَلَّكُمْ تَذَكَّرُونَ"

ارشاد خداوندی ہے

 پروردگارعدل احسان اورقرابتداروں کی مدد کرنے کا حکم دیتاہے۔ اور بے حیائی ،برائی اور سرکشی سے روکتا ہے۔ وہ تمھیں نصیحت کرتا ہے تا کہ تم یاددہانی حاصل کرو۔

2۔ قَالَ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: "ان التَّواضُعُ لا يَزيدُ العَبدَ إلاّ رِفعَةً، فتَواضَعُوا يَرفَعْكُمُ اللّه ُو إِنَّ الْعَفْوَ لا يَزِيدُ الْعَبْدَ إِلا عِزًّا، فَاعْفُوا يَعِزَّكُمُ اللَّهُ ، وَإِنَّ الصَّدَقَةَ لا يَزِيدُ المال إِلا نما، فَتَصَدَّقُوا يَزدكُمُ اللَّهُ"

رسول اللہ ﷺ نے فرمایا:

تواضع وانکساری بندے کیلئے اس کی رفعت وبلندی میں اضافہ کا باعث ہے پس تم انکساری کرو تاکہ اللہ تمہارے درجہ کو بلند کرے ،عفو وبخشش ،عزت وشرافت میں زیادتی کاسبب ہے پس تم عفو کرو تاکہ اللہ تمہیں عزت سے نوازے تم صدقہ نکالو تاکہ اللہ تمہارے مال میں اضافہ کرے۔

3۔ قال امیرالمومنین  علیہ السلام:" لا یَرجو عَبد إلا ربَّه ، ولا یَخافُ إلا ذَنبَّه ولا یستحی الذی لا یعلم أن یتعلَّم ،ولا یستحی الجاهلُ إذا سُئِل عما لم یعلم أن یقول لااعلم"

امیرالمومنین علیہ السلام نے ارشاد فرمایا:

بندہ اپنے رب کے علاوہ کسی سے امید وتوقع نہیں رکھتا اورنہ ہی اپنے گناہ کے علاوہ کسی سے خوف کھاتاہے ۔ جس کو وہ نہیں جانتااس کے جاننے میں شرم محسوس نہیں کرتااورجب اس سے کسی نامعلوم شئے کے بارے میں سوال کیا جائے تو"لااعلم" (میں نہیں جانتا)کہنے میں عار محسوس نہیں کرتا۔

4۔ قالت فاطمۃ الزھراء سلام اللہ علیہا: "أمّا وَاللّهِ، لَوْ تَرَكُوا الْحَقَّ عَلى أهْلِهِ وَ اتَّبَعُوا عِتْرَةَ نَبيّه، لَمّا اخْتَلَفَ فِى اللّهِ اثْنانِ"

جناب فاطمہ زہراء سلام اللہ علیہا نے فرمایا:

خدا کی قسم اگر لوگوں نے حق کو اہل حق کے سپرد کیا ہوتا اور عترت رسول ﷺاور اہل بیت ؑ کی پیروی کی ہوتی حتی دو افرادبھی خدا اور دین کے سلسلے میں ایک دوسرے سے اختلاف نہ کرتے ۔

5۔ الامام الحسن علیہ السلام : مرفی یوم فطر بقوم یلعبون ویضحکون، فوقف علی رؤوسهم فقال: إ ن الله جعل شهر رمضان مضماراً لخلقه، فیستبقون فیه بطاعته إلی مرضاته فسبق قوم ففازوا، وقصر آخرون فجابوا"

امام حسن علیہ السلام

عید الفطر کے روز ایک ایسی  قوم کے پاس سے گزرے جو لہو لہب اورہنسی مذاق میں مشغول تھی امام ،سردارقوم کے پاس پہنچ کرٹھہرگئے اور ارشاد فرمایا: "اللہ نے ماہ رمضان کو بندوں کیلئے دوڑ کا میدان قراردیا ہے کہ جس میں لوگ رضائے الٰہی کے خاطر اطاعت خداوندی میں سبقت کرتے ہیں پس ایک قوم نے اس مسابقہ میں سرعت کی لہذا وہ کامیاب ہوگئی اوردوسری  قوموں نے تساہلی کی لہذا وہ ناکام رہیں"

6۔ الامام  الحسین  علیہ السلام : " ایّاکَ وما یُعتَذَرُ مِنهُ ؛ فَإنَّ المُؤمِنَ لایُسییءُ ولایَعتَذِرُ والمُنافِقُ کُلَّ یوَمٍ یُسییءُ ویَعتَذِرُ"

امام حسین علیہ السلام نے فرمایا:

عذر کے مواقع سے بچو اس لئے کہ مومن نہ غلطی کرتاہے اورنہ عذر کاخواستگار ہوتاہے اورمنافق ہر روز غلطی کامرتکب ہوتاہے اور عذر خواہی کرتاہے ۔

7۔ الامام زین العابدین علیہ السلام:" إنَّ الْمَعْرِفَهَ، وَكَمالَ دینِ الْمُسْلِمِ تَرْكُهُ الْكَلامَ فیما لایُغْنیهِ، وَقِلَّهُ ریائِهِ، وَحِلْمُهُ، وَصَبْرُهُ، وَحُسْنُ خُلْقِهِ "

امام زین العابدین علیہ السلام نے ارشاد فرمایا:

ایک مسلم کاکامل دین اورمعرفت یہ ہے کہ ایسی بات نہ کہے کہ جس کی حفاظت وہ خود نہیں کرسکتااور یہ کہ کم خوراک ہونے کے ساتھ ساتھ حلیم وبرباد اورنیک سیرت ہو

الام الباقر علیہ السلام:" إیّاکَ و الکَسَلَ و الضَّجَرَ فإنّهُمَا مِفتَاحُ کلِّ شَرٍّ، مَن کَسِلَ لَم یُؤَدِ حقّاً ومن ضجرلم یصبرعلیٰ حق"

امام محمد باقر علیہ السلام کا ارشاد گرامی ہے۔

تساہلی سے وبے قراری سے بچو یہ  دونوں چیزیں تمام آفتوں کی کنجی ہیں پس جس نے بھی تساہلی سے کام لیااس نے گویا حق پر صبر نہیں کیا۔

9۔ الامام الصادق علیہ السلام: "عليكم بتقوي الله والورع والاجتهاد و صدق الحديث و اداءالامانه و حسن الخلق و حسن الجوار و كونوا دعاة الی انفسکم بغیر السنتکم و کونوا لنا زينا و لاتكونوا علينا شيناً وعلیکم بطول الرکوع والسجود، فإنّ أحدَکم إذا أطال الرکوع والسجود هتف إبلیس من خلفه ، وقال : یا وَیلَه! أطاع وعصیتُ وسجد وأبیتُ"

امام صادق علیہ السلام کاارشاد ہے۔

خوف خدا، زہد وتقویٰ ،سعی وکوشش ،راست گوئی ،ادائے امانت، نیک سیرتی اور پڑوسیوں کے ساتھ حسن سلوک تم پر فرض ہے زبان کے علاوہ  اپنے نفس کی طرف دعوت دینے والا بن جاؤ نیز ہمارے لئے باعث زینت ہوناباعث ننگ وعار نہ بننا،رکوع وسجود کو طول دو اس لئے کہ جب تم میں سے کوئی رکوع کو طول دیتاہے توشیطان پیچھے سے چیختاہے ۔ائے وای! ان لوگوں نے اطاعت خدا کی اورمیں نے نافرمانی انھوں نے سجدے کئے اورمیں نے انکار"

10۔ الامام الکاظم علیہ السلام:" لاتمحنوا الجھال الحکمۃ فتظلموھا ولا تمنعوھا اھلھافتظلموھم" 

امام کاظم علیہ السلام نے ارشاد فرمایا:

"جاہلوں کو حکمت عطانہ کرو اگر ایساکیا پس ظلم کیا اور اہل حکمت سے حکمت کو باز نہ رکھو اگر ایسا کروگے تو گویا ان پر ظلم کروگے"

11۔ الامام الرضاعلیہ السلام:" إِصْحَبِ السُّلْطانَ بِالْحَذَرِ، وَ الصَّدیقَ بِالتَّواضُعِ، وَ الْعَدُوَّ بِالتَّحَرُّزِ وَ الْعامَّةَ بِالْبُشْرِ "

امام رضاعلیہ السلام کا ارشاد گرامی ہے۔

سلطان کی صحبت اختیار کرو اجتناب کے ساتھ ،دوستوں کی تواضع وانکساری کے ساتھ ،دشمن کی تحرز وحفاظت کے ساتھ اورلوگوں کی خوش روئی وخندان پیشانی کے ساتھ"

12۔ الامام الجوادعلیہ السلام:" ثلاثۃ یبلغن العبد رضوان اللہ تعالیٰ : کثرۃ الاستغفارولین الجانب وکثرۃ الصدقۃ"

امام محمدتقی  علیہ السلام نے ارشاد فرمایا:

تین چیزیں بندے کو خوشنودی خدا تک پہنچا دیتی ہیں ،کثرت سے استغفارکرنا اپنے رویہ میں نرمی وانکساری اختیار کرنا، زیادہ صدقہ دینا۔

13۔الامام الھادی علیہ السلام:"الناس فی الدنیا بالاموال وفی الآخرۃ بالاعمال"

امام علی نقی  علیہ السلام نے ارشاد فرمایا:

لوگوں کی ارزش واہمیت دنیا میں مال کی وجہ سے ہے اورآخرت میں عمل کی وجہ سے ہے۔

14۔ الامام عسکری علیہ السلام:"جعلت الجنایۃ فی بیت والکذب مفاتیحھا"

امام عسکری علیہ السلام کا ارشاد گرامی ہے۔

تمام  برائیاں ایک خانہ میں جمع ہیں اوراس کی کنجی دروغ گوئی ہے۔

15۔ الامام صاحب الزمان علیہ السلام:" اذا اردتم التوجہ بناالی اللہ تعالیٰ والینا فقولوا کما قال اللہ تعالیٰ : سلام علیٰ آل یاسین"

امام آخرالزمان علیہ السلام کاارشاد ہے۔

جب تم ہماری طرف سے اور خدا کی طرف متوجہ ہوناچاہو توکہوجیسے خدا وند عالم نے ارشاد فرمایا"سلام علیٰ آل یٰسین"