سوال جلد ی ارسال کریں
اپ ڈیٹ کریں: 2019/11/16 زندگی نامہ کتابیں مقالات تصویریں دروس تقریر سوالات خبریں ہم سے رابطہ
زبان کا انتخاب
همارے ساتھ رهیں...
موضوعات کی ترتیب آخری سوالات کوئی بھی سوال زیادہ دیکھیں جانے والی سوالات

آخری سوالات

کوئی بھی سوال

زیادہ دیکھیں جانے والی سوالات

الله تعالی کا فرمان هے :لیس کمثله شیء الله تعالی کا کوئی مثل نهیں هے. تو آپ کی نظر میں کیا یه درست هے که هم آیت کی تفسیر میں یه کهیں که الله کا مثل محمد وآل محمد علیهم السلام هیں ؟

سوال: الله تعالی کا فرمان هے :لیس کمثله شیء الله تعالی کا کوئی مثل نهیں هے. تو آپ کی نظر میں کیا یه درست هے که هم آیت کی تفسیر میں یه کهیں که الله کا مثل محمد وآل محمد علیهم السلام هیں ؟ جیسا که بعض روایات میں دیکھنے میں آتا هے که جب ملائیکوں نے همارے نبی ﷺ کو دیکھا تو کها : (ماأشبه هذا النور بنور ربنا) یه نورهمارے رب کے نور سے کتنا مشابه هے؟

جواب  : آیت کریمه (ليس كمثله شيء) محکمات میں سے هیں اور تمام متشابهات کی بازگشت اسی کی طرف هے اس طرح کے احتمالات جو آپ نے بیان فرمایا اس محکم آیت کو متشابهات میں تبدیل کر دیتا هے لیکن ملائکه کا قول حضور کے رب جیسا هونے پر دلالت نهیں کرتا هے هاں حدیث قدسی میں الله تعالی کا یه فرمان موجود هے که  (عبدي أطعني حتی اجعلك مَثَلي ـ بفتح المیم والثاء ـ أقول للشيء كن فیكون وتقول لشيء كن فیكون)اے میرا بنده میری اطاعت کر ، میں تجھے مجھ جیسابنا دونگا میں کسی شئ سے کهوں بن جا تو وه بن  جاتا هے تو بھی کسی شئ سے کهے بن  جا تو وه بن  جائے گا لهذا  مثَل ثاء کو فتحه دینے اور مِثل ثاءکو ساکن کرنےمیں بڑا فرق هے.

تاریخ: [2015/4/25]     دوبارہ دیکھیں: [1341]

سوال بھیجیں