سوال جلد ی ارسال کریں
اپ ڈیٹ کریں: 2024/5/8 زندگی نامہ کتابیں مقالات تصویریں دروس تقریر سوالات خبریں ہم سے رابطہ
زبان کا انتخاب
همارے ساتھ رهیں...
آخری خبریں اتفاقی خبریں زیادہ دیکھی جانے والی خبریں
  • یکم ذیقعدہ(1445ھ)ولادت حضرت معصومہ(س)کےموقع پر
  • 25شوال(1445ھ)شہادت امام جعفر صادق (ع) کے موقع پر
  • 15 شعبان(1445ھ)منجی عالم حضرت بقیہ اللہ (عج) کی ولادت کے موقع پر
  • اعیاد شعبانیہ (1445ھ)تین انوار ھدایت کی ولادت باسعادت کے موقع پر
  • 25رجب (1445ھ)حضرت امام کاظم علیہ السلام کی شہادت کے موقع پر
  • 13رجب (1445ھ)حضرت امام علی علیہ السلام کی ولادت کے موقع پر
  • 20جمادی الثانی(1445ھ)حضرت فاطمہ زہرا کی ولادت کے موقع پر
  • 13جمادی الثانی(1445ھ) حضرت ام البنین کی وفات کے موقع پر
  • 17ربیع الاول(1445ھ)میلاد باسعادت صادقین( ع) کے موقع پر
  • رحلت رسولخدا، شہادت امام حسن مجتبیٰ ؑاور امام رضا ؑکے موقع پر
  • 20صفر (1445ہجری) چہلم امام حسین علیہ السلام کے موقع پر
  • 10محرم (1445ھ)امام حسین( ع)اور آپکے با وفا اصحاب کی شہادت
  • مرحوم آیت اللہ سید عادل علوی (قدس سرہ) کی دوسری برسی کے موقع پر
  • 18ذی الحجہ(1444ھ) عید غدیرخم روز اکمال دین اوراتمام نعمت
  • 15ذی الحجہ(1444ھ)ولادت امام علی النقی علیہ السلام کےموقع پر
  • 7ذی الحجہ(1444ھ)شہادت امام باقر علیہ السلام کےموقع پر
  • 15شعبان المعظم(1444ھ)ولادت امام مہدی (عج) کےموقع پر
  • 10 رجب (1444ھ)ولادت باسعادت امام محمدتقی علیہ السلام کےموقع پر
  • یکم رجب (1444ھ)ولادت امام محمدباقرعلیہ السلام کےموقع پر
  • ولادت باسعادت حضرت امام حسن عسکری علیہ السلام
  • آخری خبریں

    اتفاقی خبریں

    زیادہ دیکھی جانے والی خبریں

    عیدسعیدفطر کی مناسبت سے مبارکباد پیش کرتے ہیں ۔

    عیدسعیدفطرمبارک

    ہم ، تمام امت مسلمہ، علمائے کرام، قیدی مسلمانوں اور ساری دنیا کے مظلوم وکمزور مسلمانوں کوعیدالفطر کے اس موقع پر دل کی گہرائیوں سے عید مبارکباد پیش کرتے ہیں۔ اللہ تعالی سے ہم دعاگو ہیں کہ وہ اس عید کو ہماری لیے بخشش اور رحمت کی عید بنائے اور ہمیں ان لوگوں میں سے لکھ دے جن کے نماز ،روزے اور رمضان میں کیے جانے والے دیگر عبادات کے اعمال کو بارگاہ الہی میں شرف قبولیت سے نوازتے ہوئے جہنم کی آگ سے ان کی گردنوں کو آزاد کردیا گیا ہے۔

    خداوند متعال کا شکر گزار ہیں کہ اس نے موقع دیا، عمر عطا کی اور ہم کو ایک اور ماہ رمضان اور ایک اور عید فطر دیکھنے کی سعادت حاصل ہوئی۔ یہ ایک بڑی نعمت ہے۔ الہی مہمانی میں شرکت کی نعمت۔ ہماری ملت نے در حقیقت اس مہینے سے کما حقہ فائدہ اٹھایا اور عوام نے اس ماہ شریف و عزيز کی قدر کو سمجھا، مجلسوں، محفلوں، تلاوتوں، تسبیحوں، دعاؤں اور تمام پروگراموں میں، جو زیادہ تر نوجوانوں کے قلوب اور ان کی پاک و پاکیزہ روحوں کو جذب کر لیتے ہیں، شریک ہوئے اور اس ملت کے لئے انشاء اللہ رحمت الہی کے دریچے بازہوگئے۔ اس کی قدر کرنا چاہئے۔

    اللہ تعالی سے متعلق عشق و ارادت اور معنویت ہمارے عوام کے وجود میں گھر کرچکی ہے اور اس کی جڑیں گہرائیوں میں پیوست ہیں۔ ممکن ہے بعض افراد خطا و اشتباہ سے دوچار ہوں، اپنی انفرادی زندگی میں غلطیاں کر بیٹھیں لیکن ماہ رمضان المبارک انہیں بھی یہ موقع فراہم کر دیتا ہے کہ خداوند متعال کی طرف پلٹ آئیں، اسے یاد کریں ذکر و تسبیح اور توبہ و استغفار کرے۔ تمام انسانوں کے یہاں خدا سے ارتباط پیدا کرنے والی روح اور معنوی جذبہ موجود ہے۔

    ہمیں اوربھی اس عید کی خوشیاں مناتے ہوئے تقوی کے تقاضوں کو پورا کرنے کے لیے جدوجہد کوجاری رکھنا چاہئے، جن کی خاطر ہم نے رخصت ہونے والے اس رمضان میں بھوکے اور پیاسے رہ کر روزے رکھنے اور نماز جیسی دیگر عبادات کا اہتمام کیا۔ رمضان میں ان عبادات کو بجالانے سے مقصد ہی یہ تھا کہ ہمارے دلوں میں تقوی پیدا ہو جائے اور ہم قرآن وسنت کے بتائے ہوئے اچھے کاموں کو کرنے والے اور برے کاموں کو چھوڑنے والے بن جائے۔ اگر ہم رمضان کے بعد بھی آنے والے مہینوں میں اسی طرح تقوی کو پانے اور ایمان کے تقاضوں کو پورا کرنے کے لیے مسلسل جدوجہد جاری رکھنے کی پابندی کرتے ہیں تو پھر ہمارے لیے دنیا وآخرت میں خوشخبریاں ہی خوشخبریاں اور کامیابیاں ہی کامیاں ہیں۔